وزیراعظم شہبازشریف کی زیرصدارت پی آئی اے کی نجکاری اور ایف بی آر کی ری سٹرکچرنگ سے متعلق اعلیٰ سطح کا اجلاس


 اسلام آباد۔وزیراعظم شہبازشریف نے ایف بی آر کی آٹو میشن کے نظام کے مجوزہ روڈ میپ کی اصولی منظوری دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ اب اس روڈ میپ پر وقت کے واضح تعین کے ساتھ عملدرآمد کیا جائے،ٹیکس وصولیوں اور ریونیو سے متعلق عدالتوں میں زیرالتوا مقدمات اورقانونی تنازعات کے حل کے لئے وزارت قانون سفارشات دے۔

وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے بدھ کو جاری پریس ریلیز کے مطابق وزیراعظم شہبازشریف کی زیرصدارت پی آئی اے کی نجکاری اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کی ری سٹرکچرنگ سے متعلق اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا۔ وزیراعظم شہبازشریف نے قومی ائیر لائن پی آئی اے کی نجکاری پر عملدرآمد کے لئے حتمی شیڈول طلب کرتے ہوئے وزارت نجکاری کو ہدایت کی کہ ضروری اقدامات کے بعد آئندہ دوہ روز میں شیڈول پیش کرے۔

وزیراعظم نے سختی سے ہدایت کی کہ اس عمل میں کسی قسم کی سستی اور لاپرواہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ تمام مراحل میں شفافیت کو سوفیصد یقینی بنایا جائے۔ اجلاس میں پی آئی اے کی نجکاری کی اب تک کی پیشرفت اور اس ضمن میں آئندہ کے مراحل پر غور کیاگیا۔

اجلاس میں ایف بی آر کی آٹو میشن، نظام میں شفافیت کو یقینی بنانے، عالمی معیار کے مطابق ڈھانچہ جاتی اصلاحات، مراعات کے ذریعے ٹیکس میں اضافے، کرپشن و سمگلنگ کے خاتمے ، ان لینڈ ریونیو اور کسٹم کے شعبے الگ کرنے اور ٹیکس ریٹ میں کمی پر پیش کردہ تجاویز کا تفصیلی جائزہ لیاگیا۔ وزیراعظم شہبازشریف نے ایف بی آر کی آٹو میشن کے نظام کے مجوزہ روڈ میپ کی اصولی منظوری دیتے ہوئے ہدایت کی کہ اب اس روڈ میپ پر وقت کے واضح تعین کے ساتھ عملدرآمد کیا جائے،

0/Post a Comment/Comments

before post content

after post