نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس


 


 

نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس 

وزیراعظم کا نگران حکومت کے مختصر عرصے کے دوران اپنی کابینہ اور سول سرونٹس کی ان تھک کاوشوں پر ان کو خراج تحسین

ہم منتخب حکومت کے لئے ایک ایسا لائحہ عمل دے کر جا رہے ہیں جو یقینی طور پر عوام اور قومی مفاد کے لئے مفید ثابت ہو گا :

وفاقی کابینہ کا مختلف اداروں کی تنظیم نو، بیرونی سرمایہ کاری کے فروغ اور کاروبار کو سہولت فراہم کرنے کے حوالے سے نگران حکومت کے اقدامات پر اظہار اطمینان

کابینہ سیکرٹری نے وفاقی بیوروکریسی کی جانب سے وزیراعظم کی مدبرانہ قیادت  کو سراہا

محترمہ لبنیٰ فاروق ملک کی ڈیپوٹیشن بطور ڈائریکٹر جنرل، فنانشل مانیٹرنگ یونٹ (FMU) کی مدت میں مورخہ 9 جون 2023 سے 8 جون 2024 تک توسیع دینے کی منظوری

چیف آف آرمی اسٹاف جنرل سید عاصم منیر  NI (M) کو پاکستان اور ترکیہ کی مسلح افواج کے مابین تعاون کے حوالے سے اُن کی خدمات کے اعزاز میں حکومت ترکیہ کی جانب سے ”ٹرکش آرمڈ فورسز لیجئن آف میرٹ ( Turkish Armed Forces Legion of Merit)“ ایوارڈ وصول کرنے کی اجازت کی منظوری

 وزارت قومی غذائی تحفظ و تحقیق ، حکومت پاکستان اور خلیفہ انٹرنیشنل ایوارڈ فار ڈیٹ پام اینڈ ایگریکلچر انوویشن ، متحدہ عرب امارات کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی منظوری

نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت  وفاقی کابینہ کا اجلاس آج اسلام آباد میں منعقد ہوا۔

 وزیراعظم نے نگران حکومت کے مختصر عرصے کے دوران اپنی کابینہ اور سول سرونٹس کی ان تھک کاوشوں کو سراہتے ہوئے ان کا  شکریہ ادا کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہم ملکی معیشت کو پہلے سے بہتر حالت میں چھوڑ کر جا رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ نگران حکومت کے مختصر وقت میں کابینہ نے بہترین کارکردگی دکھائی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم منتخب حکومت کے لئے ایک ایسا لائحہ عمل دے کر جا رہے ہیں جو یقینی طور پر عوام اور قومی مفاد کے لئے مفید ثابت ہو گا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ نگران حکومت کے تمام فیصلوں اور پالیسی سازی میں ملکی مفاد کو ہمیشہ اولین ترجیح دی گئی۔  ان کا کہنا تھا کہ ہمیں پاکستان کے ترقی و  استحکام کے لئے مل کر کام کرنا ہے۔

وفاقی کابینہ نے مختلف اداروں کی تنظیم نو، بیرونی سرمایہ کاری کے فروغ اور کاروبار کو سہولیات فراہم کرنے کے حوالے سے نگران حکومت کے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔

کابینہ سیکرٹری نے وفاقی بیوروکریسی کی جانب سے وزیراعظم کی مدبرانہ قیادت کو سراہتے ہوئے کہا کہ ملک کو درپیش اہم چیلنجز میں آپ کی طرف سے  ملکی مفاد میں اہم مشکل فیصلے لئے گئے جن کے دوررس نتائج نکلیں گے۔  

وفاقی کابینہ اجلاس کے آج کے اجلاس کے ایجنڈے کی تفصیلات


٭وفاقی کابینہ نے وزارتِ خزانہ کی سفارش پرمحترمہ لبنیٰ فاروق ملک کی ڈیپوٹیشن بطور ڈائریکٹر جنرل، فنانشل مانیٹرنگ یونٹ (FMU) کی مدت میں مورخہ 9 جون 2023سے 8 جون 2024 تک توسیع دینے کی منظوری دے دی۔  

وفاقی کابینہ نے وزارت خارجہ کی سفارش پر چیف آف آرمی اسٹاف جنرل سید عاصم منیر NI (M) کو پاکستان اور ترکیہ کی مسلح افواج کے مابین تعاون کے حوالے سے اُن کی خدمات کے اعزاز میں حکومت ترکیہ  کی جانب سے ”ٹرکش آرمڈ فورسز لیجئن آف میرٹ ( Turkish Armed Forces Legion of Merit)“ ایوارڈ وصول کرنے کی اجازت دے دی۔  

*وفاقی کابینہ نے وزارت قومی غذائی تحفظ و تحقیق کی سفارش پر وزارت قومی غذائی تحفظ و تحقیق ، حکومت پاکستان اور خلیفہ انٹرنیشنل ایوارڈ فار ڈیٹ پام اینڈ ایگریکلچر انوویشن ، متحدہ عرب امارات کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی منظوری دے دی۔ اس مفاہمتی یادداشت کے تحت پہلا پاکستان انٹرنیشنل ڈیٹ پام فیسٹیول ستمبر 2024 میں منعقد کیا جائے گا جس کا مقصد پاکستان میں کھجور کی پیداوار کا فروغ ہے۔ 

وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے13-02-2024 اور 14-02-2024 کو منعقد  ہونے والے اجلاسوں میں کئے گئے فیصلوں کی توثیق کردی۔ 

وفاقی کابینہ نے کابینہ کمیٹی برائے حکومتی ملکیتی ادارہ جات(State Owned Enterprises  کے16-02-2024 کو منعقد  ہونے والے اجلاس میں کئے گئے فیصلوں کی توثیق کردی۔ 

٭ وفاقی کابینہ نے کابینہ کمیٹی برائے لیجسلیٹو کیسز کے 16-02-2024 کو منعقد  ہونے والے اجلاس میں کئے گئے فیصلوں کی توثیق کردی۔ 

0/Post a Comment/Comments