بلوچستان کا وزیراعلیٰ کون ہوگا، پرانے اتحادیوں میں نئی جنگ


 بلوچستان اسمبلی کی تمام 51 نشستوں کے نتائج سامنے آ گئے ہیں، جن کے مطابق بظاہر پیپلز پارٹی، جمیعت علمائے اسلام (ف) اور مسلم لیگ (ن) لیڈ کرتے نظر آرہے ہیں، جنہوں نے بالترتیب 11، 11 اور 10 نشستیں حاصل کرلی ہیں، ان کے علاوہ دیگر جماعتوں نے بھی نشتسیں حاصل کی ہیں جیسے کہ آزاد امیدوار چھ، بلوچستان عوامی پارٹی چار، نیشنل پارٹی تین اور عوامی نیشنل پارٹی دو نشستوں پر کامیاب ہوئیں، اسی طرح بلوچستان نیشنل پارٹی، جماعت اسلامی، بی این پی عوامی اور حق دو تحریک نے ایک ایک نشست حاصل کی۔

اس صورت حال کو دیکھتے ہوئے، یہ تو ممکن نہیں رہا کہ صوبے میں کسی ایک جماعت کی حکومت قائم ہو، اب سیاسی جوڑ توڑ کے زریعے ہی ایک مخلوط حکومت قائم ہونی ہے، جس کیلئے سیاسی جماعتوں کے درمیان ملاقاتوں اور مذاکرات کا سلسلہ چل نکلا ہے۔

لیکن صوبے کے ماضی اور موجودہ صورت حال کو دیکھا جائے تو نئے وزیراعلیٰ کے انتخاب پر تین بڑی جماعتوں اور پرانے اتحادیوں میں جنگ چھڑتی نظر آرہی ہے۔

0/Post a Comment/Comments

before post content

after post