پنجاب میں ’’شیر‘‘ کی واپسی، مریم نواز پہلی خاتون وزیراعلیٰ منتخب


 لاہور: مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر مریم نواز پاکستان اور پنجاب کی پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب ہوگئیں۔

پنجاب اسمبلی کا اجلاس سپیکر ملک احمد خان کی زیر صدارت ہوا، اس موقع پر وزیر اعلیٰ کا انتخاب کیا گیا جس میں مریم نواز 220 ووٹ لے کر پہلی خاتون وزیراعلیٰ منتخب ہوئیں۔

سپیکر پنجاب اسمبلی نے سنی اتحاد کونسل کے اراکین کے بغیر ہی سیکرٹری کو کارروائی شروع کرنے کی ہدایت کی۔

اسمبلی میں سنی اتحاد کونسل کے اراکین کے بغیر ہی وزیراعلیٰ کے انتخاب کیلئے کارروائی کی گئی۔

رائے شماری مکمل ہونے پر سپیکر پنجاب اسمبلی ملک احمد خان نے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مریم نواز نے 220 ووٹ حاصل کئے جبکہ ان کے مدمقابل آفتاب احمد خان کوئی ووٹ نہ لے سکے۔

اعلان کے بعد مریم نواز وزیراعلیٰ کی نشست پر بیٹھ گئیں، اس موقع پر سپیکر اسمبلی نے مریم نواز کو وزیراعلیٰ منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی۔

قبل ازیں آدھا گھنٹہ تاخیر سے پنجاب اسمبلی کا اجلاس شروع ہوا تو سیکرٹری اسمبلی کی جانب سے ووٹنگ کا طریقہ کار بتایا گیا اور کہا گیا کہ 5 منٹ کے وقفے کے بعد اسمبلی کے دروازے بند کر دیئے جائیں گے۔

ووٹنگ کا طریقہ کار بتائے جانے کے کچھ دیر بعد ہی سنی اتحاد کونسل کے اراکین نے شور شرابہ شروع کر دیا، جس پر سپیکر ملک احمد خان نے کہا کہ جو کچھ ہوگا آئین کے مطابق ہوگا۔

0/Post a Comment/Comments

before post content

after post