نسٹیئن ، اپنی پیشہ ورانہ مہارت، نیٹ ورکنگ اور فلاحی سرگرمیوں سے امریکہ میں اپنی شناخت بنا رہے ہیں: مسعود خان


 

نسٹیئن  ، اپنی پیشہ ورانہ مہارت، نیٹ ورکنگ اور فلاحی سرگرمیوں   سے امریکہ میں اپنی شناخت بنا رہے ہیں: مسعود خان

امریکہ میں پاکستانی سفیر مسعود خان نے کہا ہے کہ  نسٹیئن ، پاکستان میں بھی   ہمارے لئے باعث فخر ہیں  اور وہ  یہاں امریکہ میں بھی   ہمارا سر فخر سے بلند کر رہے ہیں۔ انہوں  نے کہا کہ  امریکہ میں مقیم  پاکستانی پیشہ ور افراد  اور ماہرین  نہ صرف اپنے  متعلقہ  شعبوں میں  ایک منفرد  شناخت بنا رہے ہیں بلکہ وہ  اپنے آپ  کو پاکستان اور امریکہ  کا  سب سے زیادہ پائیدار  ربط    ثابت کر رہے ہیں۔ سفیر پاکستان نے کہا کہ ہمیں امریکہ میں موجود پاکستانی کمیونٹی  اور انکی امریکہ اور پاکستان میں خدمات پر فخر ہے۔

سفیر پاکستان   مسعود خان نے ان خیالات کا اظہار  امریکہ میں مقیم  معروف پاکستانی تعلیمی ادارے نسٹ  کے طلبا کی جانب سے قائم کردہ تنظیم  نسٹیئن کی قیادت کے ساتھ ای میٹنگ کے دوران کیا۔ نسٹیئن  نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی کے   تقریباً 1200 سابق طلباء کا ایک  مضبوط  نیٹ ورک ہے جو فلاحی، تعلیمی، سائنسی اور ادبی سرگرمیوں میں سرگرم عمل ہے۔

سفیر  پاکستان  کو تنظیم کی تاریخ اور  حاصل شدہ کامیابیوں کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے صدر نسٹیئن   ڈاکٹر عظیم سرور نے بتایا   کہ تنظیم 07 علاقائی اور 17 مقامی  ابواب   پر مشتمل ہے اور اس کے ممبران امریکہ کی 180 معروف کمپنیوں  اور 20 سے زیادہ یونیورسٹیوں میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔  انہوں نے کہا تنظیم اپنے ممبران کو نوکری کی تلاش اور انکو متعارف کرانے کے حوالے سے خدمات سر انجام دے رہی ہے۔

ڈاکٹر سرور نے کہا کہ تنظیم نے 2019 سے اب تک 1.57 ملین ڈالر اکٹھے کیے ہیں جو  فلاحی سرگرمیوں  کے لئے خرچ کیے جا رہے ہیں ۔   انہوں   نے کہا کہ نستیئن نے مختلف تعلیمی اداروں میں 26 سے زیادہ اسکالرشپ انڈومنٹ سیٹیں  قائم کی   ہیں۔  رواں  سال 13 انڈومنٹ سیٹیں بنائی گئیں اور 100 سے زائد طلباء کو مالی امداد فراہم کی گئی۔

ڈاکٹر   سرور نے کہا کہ نستیئن نے سیلاب  سے متاثرہ افراد   کے لئے   امدادی سرگرمیوں کے ضمن میں  محض   چھ ہفتوں میں   تقریباً 100,000  ڈالر  جمع کیے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یہ فنڈز  نسٹ  کے ذریعے  جنوبی پنجاب، بلوچستان، سندھ اور خیبر پختونخواہ   کے چار دیہاتوں میں بھیجے گئے۔

انہوں نے سفیر  پاکستان  کو سمر ریسرچ انٹرن  شپ پروگرام، گریجویٹ کوچنگ،  اڈاپٹ اے اسکالر پروگرام،  نسٹ  سے فارغ  التحصیل  امریکہ میں موجود طلباء  سے روابط کاری اور ان   کا ڈیٹا بیس، ملازمت کی تلاش اور فنڈز اکٹھا کرنے کی کوششوں سمیت دیگر مختلف سرگرمیوں کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔

سفیر پاکستان نے امریکہ میں پاکستانی پروفیشنل حضرات کا ایک مضبوط نیٹ ورک قائم کرنے پر نسٹیئن قیادت کی کاوشوں کو سراہا۔  انہوں نے  نسٹیئن  کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا اور  ان کے  مشن میں سفارت خانے کی جانب سے   مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

0/Post a Comment/Comments

before post content

after post