نگران وفاقی وزیر اطلاعات مرتضیٰ سولنگی کا پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام ”انتخابی ضابطہ اخلاق

 



نگران وفاقی وزیر اطلاعات مرتضیٰ سولنگی کا پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام ”انتخابی ضابطہ اخلاق 



نگران وفاقی وزیر اطلاعات مرتضیٰ سولنگی کا پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام ”انتخابی ضابطہ اخلاق : میڈیا سمیت اسٹیک ہولڈرز کا اخلاقی طرز عمل“ کے موضوع پر سیمینار سے خطاب

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اپنا ضابطہ اخلاق جاری کیا ہے، مرتضیٰ سولنگی

میڈیا کو الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق سے ضرور آگاہ ہونا چاہئے، مرتضیٰ سولنگی

الیکشن سے متعلق بے بنیاد پروپیگنڈا کیا جا رہا تھا، مرتضیٰسولنگی

8 فروری کے انتخابات کے بارے میں بہت سے لوگوں نے قیاس آرائیاں کیں، مرتضیٰ سولنگی

وفاقی حکومت نے اپنا موقف مستقل مزاجی سے پیش کیا، مرتضیٰ سولنگی

ملک وفاقی پارلیمانی جمہوری نظام پر چلے گا، اس پر سب کا اتفاق ہے، مرتضیٰ سولنگی

18 ویں ترمیم میں آرٹیکل 224 میں ترمیم کر کے نگران حکومتوں کا نظام لایا گیا، مرتضیٰ سولنگی

پارلیمانی نظام میں قانون سازی سے بہتری لائی جا سکتی ہے، مرتضیٰ سولنگی

عوام کے پاس اختیار ہونا چاہئے کہ وہ اپنے منتخب نمائندوں کو جوابدہ بنائیں، مرتضیٰ سولنگی

ری کالنگ الیکشن کا تصور سب سے پہلے یونان میں شروع ہوا، مرتضیٰ سولنگی

ری کالنگ کا نظام کینیڈا، امریکہ، جرمنی سمیت کئی ملکوں میں ہے، مرتضیٰ سولنگی

ووٹرز کی ایک خاص شرح کو اختیار ہونا چاہئے کہ اگر کوئی منتخب عہدیدار ان کی توقعات پر پورا نہ اتر سکے تو وہ اس کی شکایت کر سکیں، مرتضیٰ سولنگی

جمہوری نظام میں بہتری لانے کے لئے اقدامات اٹھائے جا سکتے ہیں، 

جمہوری نظام عوام کے لئے ہے، 

ڈیجیٹل میڈیا پر کئی مسائل موجود ہیں، 

سوشل میڈیا پر کچھ قوتیں پاکستان میں عدم استحکام اور افراتفری چاہتی ہیں، 

ریاستی عملداری سے سوشل میڈیا پر بے بنیاد پروپیگنڈے کا مقابلہ کیا جا رہا ہے

0/Post a Comment/Comments