قائد اعظم کے 147 ویں یوم ولادت پر نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کا پیغام



آج ہم قائداعظم محمد علی جناح کا   147 واں یوم پیدائش پورے جوش و جذبے کے ساتھ منا رہے ہیں۔پوری قوم بانی پاکستان کو انتہائی عقیدت اور احترام کے ساتھ یاد کرتی ہے۔ ہم بحیثیت قوم اللہ تعالیٰ کے شکر گزار ہیں کہ ہمیں اس عظیم قائد سے نوازا جس نے برصغیر کے مسلمانوں کی قیادت کی اور بالآخر ہمارے لیے ایک آزاد وطن حاصل کیا۔ قائد نے دنیا کے نقشے پر ایک نئی آزاد مسلم ریاست کے قیام کی جدوجہد  کے لئے بر صغیر کے  مسلمانوں کو ایک پرچم تلے متحد کیا۔ 

قائداعظم محمد علی جناح آج بھی ہم سب کے لیے مشعل راہ ہیں، جس کی وجہ ان کا مثالی کردار اور غیر معمولی قائدانہ خصوصیات ہیں۔ قائداعظم کے عزم اور غیر متزلزل قوت ارادی نے مسلمانوں کو اپنے مقصد کے حصول کے لیے اپنی جدوجہد جاری رکھنے اور عظیم مقصد کے لیے تمام مشکلات کا بہادری سے مقابلہ کرنے کا عزم دیا۔ ان کے  اتحاد، ایمان اور نظم و ضبط کے اصولوں پر عمل پیرا ہو کر مسلمانوں نے بے مثال قربانیاں دیتے ہوئے اپنا اجتماعی مقصد حاصل کیا۔  یہ ان کی  کردار کی مضبوطی تھی جو برصغیر کے مسلمانوں کے لیے مشعلِ راہ بنی۔ ان کی اصول پسندی ، دیانت اور یقین کی وجہ سے ان کے مخالفین بھی ان کی عزت کرتے تھے۔ ان کا طرز عمل کسی بھی قسم کی مصلحت سے بالا تر تھا۔ قائداعظم کی زندگی آئینی جدوجہد اور سیاسی بصیرت کی عکاس تھی۔

اپنے عظیم قائد کو خراج عقیدت پیش کرنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ ہم بحیثیت قوم ان کے اصولوں پر عمل کریں۔

قائد اعظم نے 11 اگست 1947 کی اپنی تقریر میں یہ واضح کر دیا تھا کہ پاکستان میں ہر ایک شخص کو اپنے عقیدے اور مذہب کے حوالے سے مکمل آزادی حاصل ہو گی۔ آج کے دن بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے قائد کے دیئے ہوئے پیغام کو دہرانے کی ضرورت ہے۔

 ہمیں انتہا پسندی کی قوتوں کو شکست دینے ، جمہوریت، پرامن بقائے باہمی اور قانون کی حکمرانی کے اصولوں کو برقرار رکھنے کے لیے اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔ آئیے قومی اتحاد اور ایک خوشحال اور ترقی یافتہ پاکستان کا عہد کریں۔ قائد کے اتحاد، ایمان اور نظم و ضبط کے اصول بحیثیت قوم ہم سب کے لیے رہنما اصول بننے چاہئیں۔ اللہ ہمیں پاکستان کو صحیح معنوں میں ایک جمہوری ریاست بنانے کی توفیق عطا فرمائے جیسا کہ ہمارے عظیم قائد نے تصور کیا تھا۔ 


پاکستان پائندہ باد

0/Post a Comment/Comments