اپارکنگ قوانین کی خلاف ورزی کرنیوالے بلڈنگ مالکان کیخلاف کارروائی کا فیصلہ


 لاہور: پنجاب حکومت نے پارکنگ قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کرنیوالے بلڈنگ مالکان کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کرلیا۔

نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی کی زیر صدارت ایل ڈی اے اتھارٹی کا اجلاس ہوا، جس میں صوبائی وزیر بلدیات و اطلاعات عامر میر، صوبائی مشیر کھیل وہاب ریاض، سیکرٹریز ہاؤسنگ، خزانہ، بلدیات، تعمیرات و مواصلات اور ایل ڈی اے اتھارٹی کے بورڈ اراکین شریک ہوئے۔

اجلاس میں پارکنگ قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کرنے والے بلڈنگ مالکان کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے مطابق پارکنگ ایگریمنٹ کی خلاف ورزی کرنے والوں پر ڈی سی پراپرٹی ریٹ کے 0.5 فیصد جرمانہ ہوگا، مقررہ مدت کے اندر پارکنگ نہ کھولنے والے بلڈنگ مالکان کو 10ہزار روپے فی کنال جرمانہ ہوگا۔

نگران وزیراعلیٰ نے پارکنگ ایگریمنٹ کے نفاذ کو یقینی بنانے کیلئے ایل ڈی اے بلڈنگ اینڈ زوننگ قواعد وضوابط میں ترامیم کی منظوری بھی دے دی۔

اجلاس کے دوران لاہور میں ٹریفک کے مسائل کے حل کیلئے 7 چوراہوں پر یوٹرنز اور سلپ روڈز بنانے کی اصولی منظوری بھی دی گئی ہے، حتمی منظوری سے قبل عارضی مشق کی جائے گی اور عارضی رکاوٹیں لگا کر ٹریفک کی آمدورفت کو چیک کیا جائے گا۔

صوبائی دارالحکومت کے 32 مقامات پر عارضی تجاوزات کے مستقل خاتمے کیلئے کیمپوں کے قیام اور 26 مقامات پر روڈ انفراسٹرکچر میں بہتری کے اقدامات کی منظوری بھی دی گئی ہے جبکہ کینال روڈ ہربنس پورہ اور جلو کے درمیان پروٹیکڈیوٹرنز بنانے کے منصوبے کو منظور کیا گیا ہے۔

اجلاس میں ہاکی کے فروغ کے لئے جوہر ٹاؤن کے ہاکی سٹیڈیم کا انتظام نجی شعبے کے سپرد کرنے کے لئے ضروری اقدامات اور ٹیپا کیلئے پروموشن کمیٹیوں کی ازسر نو تشکیل کی منظوری بھی دی گئی۔

حکومت کی جانب سے پنجاب سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ اتھارٹی کو لاہور گلوبل ویلیج لیزپر دینے، لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے دائرہ کار میں واقع غیر قانونی طور پر زمین کے کمرشل استعمال پر جرمانہ عائد کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

نگران وزیراعلیٰ نے لاہور کی 9 سڑکوں کی کمرشلائزیشن کے لئے کنسلٹنٹ سروسز حصول اور ٹرانسپورٹیشن زون میں پٹرول پمپ، فریٹ ٹرمینل کی اجازت کے لئے ایل ڈی اے یوز رول 2020 میں ترامیم کی منظوری بھی دے دی۔

0/Post a Comment/Comments