دنیا بھر میں بسنے والے کشمیری آج یوم شہدائے جموں منا رہے ہیں


 لاہور: لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں بسنے والے کشمیری آج یوم شہدائے جموں منا رہے ہیں۔

نومبر 1947 ریاست جموں وکشمیر کی تاریخ کا وہ سیاہ ترین مہینہ ہے جس کے پہلے ہفتے میں ڈوگرہ فوج اور ہندو بلوائیوں نے مل کر مقبوضہ جموں و کشمیر کے علاقے جموں میں 3 لاکھ سے زائد مسلمانوں کو پاکستان جانے کا جھانسہ دے کر بے دردی سے شہید کیا تھا۔

27 اکتوبر 1947ء کو ریاست جموں و کشمیر کے ایک بڑے حصے پر قبضہ کر کے بھارتی فوج اور ڈوگرہ سامراج نے مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کا جو گھناؤنا کھیل شروع کیا نومبر 1947 سے لے کر آج تک مقبوضہ وادی کے گلی کوچے میں اس کا تسلسل جاری ہے۔

مقبوضہ جموں و کشمیر میں اب ڈوگرہ راج نہیں لیکن بھارت کے غیر قانونی قبضے کے باعث کشمیریوں کے حالات بد سے بد تر ہو چکے ہیں، آج کے دن عالمی برادری سے مطالبہ کیا جائے گا کہ وہ جنوبی ایشیاء میں پائیدار امن کے قیام کیلئے کردار ادا کرے۔

0/Post a Comment/Comments