پیٹرولیم مصنوعات کی درآمدات میں 28 فیصد سے زائد کمی ریکارڈ

 

پیٹرولیم مصنوعات کی درآمدات میں 28 فیصد سے زائد کمی ریکارڈ


رواں مالی سال کے پہلے 10 ماہ کے دوران مجموعی طور پر پیٹرولیم مصنوعات کی درآمدات میں گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 17.96 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔

ادارہ شماریات کے اعداد و شمار کے مطابق جولائی تا اپریل (23-2022) کے دوران پیٹرولیم گروپ کی کل درآمدات 13,974.610 ملین ڈالر رہیں جبکہ گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران 17,033.574 ملین ڈالر تھیں، پیٹرولیم مصنوعات کی درآمد 28.07 فیصد کم ہوئی، جو کہ گزشتہ سال 8,549.224 ملین ڈالر تھی۔

رپورٹ کے مطابق مائع قدرتی گیس کی درآمدات میں 16.06 فیصد کی کمی ہوئی اور گزشتہ سال 3,705.959 ملین ڈالر سے کم ہو کر اس سال 3,110.836 ملین ڈالر رہ گئی جبکہ پٹرولیم خام تیل 1.98 فیصد کمی کے ساتھ 4,221.208 ملین ڈالر سے کم ہو کر 4,613.277 ڈالر رہ گئی۔

دوسری جانب جن مصنوعات میں مثبت نمو دیکھنے میں آئی ان میں مائع پیٹرولیم گیس شامل ہے جس کی درآمدات میں 3.53 فیصد اضافہ ہوا جو کہ گزشتہ سال 556.962 ملین ڈالر سے بڑھ کر 576.618 ملین ڈالر تک پہنچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال کے اسی مہینوں کے مقابلے میں اپریل 2023 کے مہینے کے دوران پیٹرولیم گروپ کی درآمدات میں 59.91 فیصد کی کمی دیکھی گئی، اپریل 2023 کے دوران پیٹرولیم کی درآمدات 891.468 ملین ڈالر ریکارڈ کی گئیں جبکہ اپریل 2022 کے دوران 2,223.515 ملین ڈالر کی درآمدات تھیں۔

اعداد و شمار کے مطابق ماہ بہ ماہ کی بنیاد پر اپریل 2023 کے دوران ملک میں پیٹرولیم کی درآمدات میں بھی 26.11 فیصد کی کمی واقع ہوئی ہے۔

0/Post a Comment/Comments

before post content

after post